دانت


قارئینِ کرام!
خوبصورت اور چمکدار دانت کسی بھی شخصیت میں چار چاند لگا سکتے ہیں اور  یہی  دانت اس بات کے بالکل اُلٹ ہوں تو  پھر وہ چار چاند کبھی نہیں نکلتے اور ہو سکتا ھے کہ اس کی بجائے چار دانت منہ سے نکل جائیں اور تازہ ھوا کے جھونکے اس خَلا سے حلق تک پہنچیں جیسے
؎ دل کے افسانے نگاھوں کی زبان تک پہنچے
بس یہاں سےافسانے اگلی ٹرین نگاھوں کے بعد  دانتوں کی بھی لے سکتے ہیں ، نہیں معلوم دنیا میں اب تک  کتنے لوگ محبتوں کی داستانوں میں ایک “بتیسی” پہ دل ھار بیٹھے  ھوں گے  اور بعد میں اس جعلی بتیسی کا راز کھلنے پر ان کا دل خون کے آنسو رویا ہو گا ٹوٹے دل کی بجائے ٹوٹے دانتوں کے ساتھ ، بالکل اس طرح جیسا زیڈال کا اشتہار اخبار میں کبھی آیا کرتا تھا
؎ “یہ کیا ساس نے دولہے کے سر پہ ہاتھ پھیرا وِگ ہاتھ میں آگئی، شرمندگی سے بچیئے آج ہی زیڈال استمعال کریں بالوں کو مضبوط گھنا بنائے”  غرض جتنی بتیسیاں اتنے افسانے۔دانتوں کے ساتھ ہی آخر میں جو داڑھیں موجود ہوتی ہیں ان میں اوپر نیچے دو دو داڑھوں پر مشتمل کُل چار داڑھوں کا ایک set موجود ہوتا ھے عقل داڑھ,  بےعقل داڑھ , بیوقوف داڑھ اور پاگل خبطی داڑھ بس جس انسان میں جو داڑھ زیادہ active ہو گی وہی خوبیاں اس انسان میں موجود ھوں گی ۔ Dentist کے پاس کبھی آپکا جانا ہو تو دیکھئے گا ایک عدد جگمگاتی سی بتیسی آپکو welcome کہنے ٹیبل پر موجود ہو گی آپ کو بھی چاہئے اس سے حال احوال پوچھ لیں- مشہور شخصیات کی یادگاروں میں ان کے زیر استمعال کپڑوں سے لے کر قلم تک نیلام ہوتے ہیں اب یہ تو کوئی بات نہیں ہوئی کہ  کسی خاص و عام کی جانب سے کبھی بھی کوئی  بتیسی نہ نیلام ہوئی ۔
teeth braces treatment 
   سے یا اب اور بھی جدید میڈیکل ٹیکنالوجی کی بدولت ٹیڑھے میڑھے دانتوں کو اچھے بچوں کی طرح بڑ ے آرام سے ایک ترتیب میں بٹھایا جا سکتا ھے۔ جبکہ شکل و صورت و جبڑے کی ساخت  سے ملتی جلتی پوری نقلی بتیسی مارکیٹ میں بالوں کی وِگ کی طرح بھی مل جاتی ھے سامنے کے دو یا اوپر تلے چار،چھ دانتوں کے set  بھی بآسانی مارکیٹ میں دستیاب ہیں کیا ہی اچھا ہوتا ان نقلی دانتوں کے ساتھ ایک زبان بھی دستیاب ہوتی وہ زبان جو “دے کر” کبھی نہ بدلی جاتی جیسا کہ آجکل زبان دے کے مُکر جانا عام ھے تو یہ دوسری زبان کام آ جاتی۔خیر ابھی تو ھم ذرا دانتوں کی بات کر لیں ایک مرتبہ گرمیوں کی چُھٹیاں تھیں میں اپنی پھوپھو کے گھر میں رہنے گئی۔ پھوپھو، میں اور میری کزن ہم سب ایک بڑے بیڈ پر سو رہی تھیں اور سونے سے پہلے پھوپھو نے ڈریسنگ ٹیبل پر اپنی بتیسی ایک باؤل میں بھگو کے رکھی تھی جس کا مجھے اس وقت نہیں معلوم تھا آدھی رات کا ٹائم تھا میں اٹھ کے واش روم جانے لگی ڈریسنگ ٹیبل پر نظر پڑی وہ جسے کہتے ہیں نا ڈر کے گھِگِھی بند گئی وہ حال میرا ھوا نہ منہ سے کوئی آواز نکلےاور قدم لگا کہ زمین نے جکڑ لئے کچھ نیند میں بھی تھی کتنی دیر سوچتی رہی کہ یہ عجیب سی کیا چیز ھے بڑا ڈر لگا پھر پھوپھو نے کروٹ لی تو مجھے لگا وہ جاگ گئی ہیں میں نے بھی زور زور سے ان کو آواز دی پھو پھو نے کہا کیا ھوا میں نے باؤل میں بھیگی عجیب شے کے بارے پوچھا تو پھوپھو نے بتایا کہ ارے کچھ نہیں بس دانت رات کو منہ میں تکلیف دیتے تو میں نکال کے ایسے رکھ دیتی ہوں۔مگر میں وہاں جتنے دن رہی رات کو اکثر اس بتیسی سے ڈر  جاتی تھی۔ اوپر سے پھوپھو کو غور سے دیکھا تو دانتوں کے بغیر پھوپھو کا چہرہ بدلا بدلا سا تھا جبکہ دِن میں  اس چمکدار نقلی بتیسی کے ساتھ پھوپھو کی ہنسی بڑی بَھلی لگتی تھی۔  اصلی دانت  اللہ کی عظیم نعمتوں میں سے ایک ہیں ہم ان کی حفاظت کر کے ان کی عمر اور بھی بڑھا سکتے ہیں۔
دانتوں کو چمکدار بنانے کے لئے مارکیٹ میں ایک سے بڑھ کے ایک  پراڈکٹ موجود ہے مگر یہ بات سمجھ سے باہر ھے کہ جانور چوپائے جو  گھاس اورچارے وغیرہ کااستمعال کرتے ہیں نہ کوئی ٹوتھ برش نہ ٹوتھ پیسٹ استمعال کر تے ہیں، نہ کوئی اور دادی اماں کا ٹوٹکا پھر  بھی اتنے چمکدار ایک  جیسے ترتیب والے دانت ہوتے ہیں اُن کے، اور آپ یقین مانیں ان سب میں گدھا سب سے آگے ھے ہاتھی دانت اتنے خوفناک سے لگتے اور پھر بھی پوری دنیا میں  ہاتھی دانت کی چوری  ہوتی ھے  جبکہ اتنی خوبصورت چمکدار گدھے کے دانتوں کی بتیسی کی چوری ہو گئی یہ  کبھی نہ سنا ، بس نصیب اپنا اپنا ، آخر گدھے کے پاس دانتوں کی دلکشی کا کیا راز ھے یہ تو ماھرین دانتیات کو چاہئے کہ اس پر ریسرچ کریں اورگدھے کی خوراک میں شامل اس گھاس پر اور جڑی بوٹیوں پر تحقیق کریں کہ جو گدھا روزمرہ اپنے کھانے کی روٹین میں رکھتا ھے پھر ان جڑی بوٹیوں پر مشتمل کوئی اچھا سا ٹوتھ پیسٹ\ ٹوتھ پالش بنا کر انسانوں کے لئے متعارف کروا کے مارکیٹ لانا چاہئیے- اور پراڈکٹ کو مشہور کرنے کےلئے پراڈکٹ کا نام کسی ہالی ووڈ اسٹار پر رکھ لیں مثلاً جیسے کہ   mariyln monroe toothpaste
یا
tom cruise tooth polish
            باقیوں کا نہیں معلوم  مگرمتاثرینِ اسٹاریات
star= stariyaat پاکستانی قوم دھڑا دھڑ خریدے گی۔بس  یا تو پھر قوم کے دانت چمکیں گے یا کسی کی جیب چمکے گی۔
ہمارے ہاں ٹوتھ پیسٹ کی دو چار اقسام اب بھی ایسی موجود ہیں جو کہ معیاری کہلائے جانے کے لائق ہیں اور مزے کی بات ان کا اشتہار ٹی وی پر بھی نہیں آتا مطلب ان کی تشہیر کی ضرورت نہیں پڑتی، مارکیٹ میں اس کے بغیر بھی اس پراڈکٹ کی مانگ ھے۔ کچھ بات مسواک کے حوالے سے بھی ھے کہ
گذشتہ دس بارہ سالوں سے مسواک کے استمعال کی میری عادت ھے اور ان سالوں کے تجربے کی بنیاد پر میں کہہ سکتی ہوں کہ دانتوں کی بیماریوں سے بچاؤ کا یہ بہترین طریقہ ھے ٹوتھ برش پیسٹ کے استمعال کے ساتھ ساتھ مسواک کااستمعال دانتوں کے لئے بہترین ھے اور ایک مزید چھوٹی سی بات کا خیال کر کے دانتوں کی بیماریوں سے بچا سکتا ھے کسی بھی قسم کا میٹھا استمعال کرنے کے بعد کُلی کرنا نہ بھولیں چاھے آپ نے ایک چاکلیٹ اِسٹک یا کوئی میٹھی سِپاری ہی کیوں نہ لی ہو۔ رات کو دانت صاف نہ کر سکیں تو سادہ پانی کی کلیاں کرنی چاہئے اس کے بغیر کبھی مت سوئیں روز مرہ روٹین میں مسواک کا استمعال کریں شروع میں کچھ مشکل ہو گی مگر جب  مسواک کی عادت ہو جائے گی تو اس کے فائدہ مند نتائج  آپ خود دیکھیں گے ۔ مسواک کا جب پیکٹ کھولو تو تازہ مسواک کی خوشبو بہت اعلی ہوتی ھے پورا ایک دن تو بہت تیز رہتی پھر مدھم پڑتی جاتی مسواک کے بے حد فوائد ہیں اس کے علاوہ ایک دادی اماں کا آسانی سے بننے والا ٹوٹکا بھی gums مسوڑھوں کی بیماریوں سے نجات دیتا ھے اور دانتوں کو مضبوط چمکدار بناتا ھے اس کےلئے سات یا  آٹھ ٹیبل اسپون کوئی سا بھی نمک لے لیں باریک ہو تو بہتر ھےپھر اس میں دو ٹی اسپون سرسوں آئل اور ایک ٹی اسپون کوکونٹ آئل مکس کر لیں چاہیں تو سرسوں کے بجائے زیتون آئل بھی لے سکتے ہیں اب اسے کسی خشک بوتل میں محفوظ کر لیں نمک میں آئل کی مقدار ایسی رکھنی ھے جس سے یہ ایک گاڑھا سا پیسٹ سا بن جائے، اس مکسچر کا کچھ حصہ دانتوں پر مل لیں اور پھر کلیاں کر لیں، اس کو رات سونے سے قبل کرنا زیادہ بہتر ھے،  اگر سات آٹھ چمچوں کا مکسچر بنانا مشکل ھو تو آپ فوری استمعال کےلئے 1/4 سے تھوڑاسا زیادہ چمچ  اپنی ہتیھلی پر  لے کر سرسوں کھوپرا یا زیتون کےتیل چند قطرے مکس کر کے دانتوں کے لئے استمعال کر سکتے ہیں یہ مکسچر دانتوں کو چمکدار بھی بناتا اور مضبوط بھی۔ اور gums کے لئے بھی بہترین ھے۔آپ اسے ایک  ہفتے میں چاہیں ایک دو بار یا روزانہ بھی استمعال کر سکتے ہیں۔

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s