ارب پتی


قارئینِ کرام!
کسی بھی قسم کے روزگار اور کام کے بغیر گھر بیٹھے آپ پہلےلکھ پتی،کروڑ پتی، ارب ،کھرب، مِلیئن و بِلیئن اور پھر ٹرِلیئن بن جائیں تو یقیناً لوگ آپ کو اھلاً و سھلاً کہنے والے مشہور شہزادہ سلمان کا قریبی رشتے دار سمجھیں گے۔یا  پھر آپ مارک زکربرگ،بل گیٹس کا ہم پَلّہ قرار پائیں گے۔ اور مجھے آپ سب کو یہ بتاتے ہوئے بے حد خوشی محسوس ہو رہی ھے  کی zong dead work oh 
sorry مطلب net work
کی بدولت اور ایک بے لوث اَن دیکھے عوام کی خدمت کے بے تاج و عظیم و بے مثال فی سبیل اللہ پروگرام کی بدولت میں بہت جَلد  دنیا کے امیروں کا ریکارڈ توڑ کر ان سب میں پہلے نمبر پر جانے لگی ھوں اور مزید عجیب بات یہ ھے کہ میں نے اس پروگرام میں کبھی شرکت بھی نہیں کی اور پھر بھی مجھے انہوں نے اس منزل تک پہنچایا میں کس منہ سے ان سب کا شکریہ ادا کروں بس یہی منہ ھے میرے پاس میرے محسنو ! شکریہ قبول فرماؤ ویسے آپ نہ بھی شکریہ وصول کرو تو میرا کیا چلے جانا ھے ویسے ھی جیسے آپ کے غائبانہ انعام واکرام کی مجھ نا چیز کے پاس ایک  طویل فہرست ھے اور میں پھر بھی خالی ہاتھ ہوں ایسے ہی۔ اچھا یہ انعامات و اکرام کی بارش فقط کُل میری جائداد نہیں بلکہ اس میں مجھے %101
یقین ھے کہ باقی پاکستانی بہن بھائی بھی اسی طرح  جلد بِیلینئر بن جائیں گے۔ پروگرام کی طرف سے مبارک بادیاں اور زونگ کے لا تعداد پیکیچیز، خوشخبریاں میں نے اتنی بار وصول کیں کہ مجھ ادنیٰ ھستی سے یہ خوشیاں سنبھالے نہیں سنبھل رہیں جیسے ھمارے بچپن کی بات ھے ہمارے محلے میں ھم بچوں کے گروپ کیپٹن شاہد کے دادا ابو کا پچاس ہزار کا پرائز بانڈ نکل آیا اور وہ یہ خوشی نہ سنبھال پائے اور انہیں ہارٹ اٹیک ہو گیا میں نے زندگی میں پہلی بار خوشی کی کیفیت میں بیمار ہو کے  کسی کو ایمبولینس میں اسپتال جاتے دیکھا تھا جبکہ دادا جی نے یہ رقم اپنے اکلوتے پوتے شاہد اور اس کی دو بہنوں کے نام اسپتال جانے سے پہلے ہی کر دی تھی اور ان دنوں کے حساب سے یہ تھی بھی اچھی خاصی رقم ۔بات کہاں سے کہاں نکل گئی ہاں تو میں کہہ رہی ہوں کہ مجھ سے ان عظیم  خوشیوں کا بار نہیں سنبھل رہا میں نے زونگ اور اس پروگرام کے لا تعداد خوشخبری کے توجہ دلاؤ نوٹس مطلب پیغامات کو ڈیلیٹ بھی کیا ظاہر ھے مجھے اپنی جان پیاری ھے کہیں دل کا دورہ نہ پڑ جائے،  اور ڈر کر میں نے “پروگرام” کے پیغامات کو بلاک بھی کیا مگر عجب جادوئی خوش خبریاں ھیں دو دو دِن کے وقفے سے مجھ پر بارش کی برسات کی طرح برستی ہیں اور میں حیرت زدہ کسی سلطنت کے “عظیم الشان شہنشاہ فَرماں رَوا” کی  دولت لٹانے  کی سی مہربانی والے میسیجز دیکھ کر خود کو  بہت جَلد مارک زکر برگ، بل گیٹس یا ایلن مسک کی فہرست میں دیکھ رہی ہوں میں تمام پڑھنے والو سے وہ سب پیغامات ابھی شیئر کر رہی ہوں ویسے بھی شیئر نگ اِز کیئرنگ ھے ناکیا پتہ کتنے لوگ اور ارب پتی پن جائیں میری اس چھوٹی سی نیکی سے، اور کیا آپ اس پروگرام کا نام جاننا چاہیں گے؟جسے نہ کبھی میں نے ٹی -وی پر دیکھا نہ ہی کبھی شرکت کی پھر بھی میں نے ان کے پروگرام میں قرعہ اندازی جیت لی جیسے نواز شریف لندن میں اور ان  کو پاکستان میں کورونا ویکسین لگا دی گئی ویسے۔  اس پروگرام کا نام ھے
چھوڑو پاکستان
نہیں نہیں جیتو پاکستان۔آپ ان سب کا کھلا ثبوت تصاویر میں دیکھیں اگر دو ماہ میں اتنی رقم،  اور سونا میرے حصے میں آیا تو   پورے دو چار سال کے پچھلے حساب سے اور آنیوالے دو سال تک دنیا میں موجود قارون کے متروک frozen account جیسے  خزانوں پر اس حساب سے میرا راج ہو گا۔ اور لا تعداد لیپ ٹاپس کے انعامات کے بعد مجھے  “لیپ ٹاپ کرائے پر دستیاب ہیں” کا کاروبار کر لینا چاہیئے۔ لیجئے ابھی انعامات کا ذکر میں تحریر کر رہی تھی کہ میرے  اثاثہ جات میں  مزید اضافہ ہو  گیا ھے “لُوٹو پاکستان” پروگرام کے ایک مزید میسیج کی بدولت٠اس کو بھی تصاویر میں دیکھیں۔ اور سر دھنتے جائیں اتنی دولت اتنے انعامات۔ سب کے سب لُوٹو، جیتو چھوڑو اور فراڈو کی بدولت ھیں ۔